Monday, 6 January 2014

Charh Jaye To Phir Utarta Hi Nahin


Roman Urdu   رومن اردو

Charh Jaye To Phir Utarta Hi Nahin
Yeh Ishq Bhi Ghareeb K Qarz Jaisa Hai
Urdu  اردو

چڑھ جائے تو پھر اترتا ہی نہیں
یہ عشق بھی غریب کے قرض جیسا ہے

2 comments:

Advertisement